جمعہ، 6 نومبر، 2015

خوارج کے متعلق احادیث تبلیغی جماعت پر چسپاں کرنے کا منہ توڑ جواب


ؐان تینوں احادیث میں کہیں بھی نہ تو تبلیغی جماعت کا ذکر ہے اور نہ ہی اشارہ بلکہ صاف طور پر جس جماعت اور گروہ کا ذکر تھا رضاخانیوں نے خدا خوفی سے بے پرواہ ہوکر محض تعصب میں اس جماعت کانام نہیں لیا اور تحریف کا ثبوت دیتے ہوئے اسے زبردستی تبلیغی جماعت پر چسپاں کردیا حدیث کے مکمل حوالے اور عربی عبارات بھی اسی لئے نہیں دی کہ کوئی اصل حوالوں کی طرف مراجعت نہ کرلے اور یوں ہمارا دجل و فریب ساری دنیا پرآشکارا نہ ہوجائے جن کے مجدد صاحب مکہ و مدینہ میں جھوٹ بولنے سے نہ شرمائے وہ اگر پاکستان میں بیٹھ کر نبی کریم ﷺ کی احادیث پر جھوٹ بولنے لگ جائیں تو کیا بعید ہے۔
رضاخانیوں سے میرا سوال یہ ہے کہ